ہفت روزہ مون کریشنز
Weekly MOON CREATIONS

علمی ادبی و معاشرتی سرگرمیوں پر مشتمل ہفت روزہ بفضل تعالیٰ مون کریشنزسال2011میں پرنٹ ممیڈیامیں باضابطہ طورپر داخل ہورہا ہے ۔ہفت روزہ مون کریشنز جسکی ڈیکلریشن مورخہ16اپریل2011  کو جاری ہوچکی ہے عام روایتی اخبارات سے یکسر مختلف ہو گا ۔آزادکشمیر کے  درالحکومت مظفرآباد سے شائع ہونے والے دیگر ریاستی اخبارات جہاں عوام الناس کو روزمرہ حالات حاضرہ ،سیاست ،عوامی مسائل ،تفریح ودیگر ایشوز پر آگاہی دیتے ہیں وہا ں اس امر کی ضرورت محسوس کی گئی کہ ایک ایسے ہفتہ وار اخبار  شائع کیاجائے جو کہ خاص طور پر آج کی نوجوان نسل کی نمائندگی کرسکے ۔جو انھیں انفارمیشن ،نالج اور تفریخی معلومات کے ساتھ ساتھ ان کے بہتر مستقبل کی سمت رہنمائی کرنے کے علاوہ ان کے مطالبات ومسائل کو حکام بالاتک پہنچانے میں معاون ومددگار ثابت ہو سکے۔مشکل اور چیلنچنگ پراجیکٹس پر کام کرنا مون کریشنز ٹیم کی خاصیت رہی ہے نیز نوجوانوں کے لئے مثبت اور تخلیقی سرگرمیوں کے مواقع پیدا کرنے کاکریڈٹ بھی پوری ٹیم کو جاتا ہے ۔اخبار میں حالات حاضرہ کو 25%تعلیمی و تربیت کو 50%اورمثبت تفریح کو 25%کوریج دی جائے گی ۔اور ساتھ ہی ساتھ نوجوانوں کو یہ مواقع بھی فراہم کئے جائیں گے کہ وہ اپنی آوازخیا لات ، آراء اور مسائل کو قلم کے ذریعے بیان کریں ۔نہ صرف یہ بلکہ بلحاظ عمر معاشرے میں تقسیم تمام گروپوں کو اپنے خیالات کے اظہار کاموقع بھی فراہم کیاجائے گا ۔

علمی و ادبی و معاشی

اس افراتفری کی ماحول میں ہم اپنی اقدار کو کھو چکے ہیں یا یوں کہنا زیادہ بہتر ہوگا کہ ہم اپنی گراں قدر علمی وادبی اقدار کو جانتے بوجھتے فراموش کررہے ہیں اور اس کے لئے ہم اپنے نوجوان طبقے کو قصوروار ٹھہرانے کے ہرگز حقدار نہیں ہیں ۔اسی مدعے کو مدنظر رکھتے ہوئے ہم کشمیر کی تہذیب و ثقافت کو بھی اس اخبار کی رنگینیوں میں شامل کررہے ہیں۔یہ نہ صرف کشمیر کی قدیم ثقافت کے متعلق ہمیں معلومات دیں گی بلکہ اس کے پس پردہ پڑی روایات کوفروغ دینے کا بھی باعث بنیں گی ۔حالات نے ہمیں ایک ایسے چور اہے پر لاکھڑا کیاہے جہاں سے ہر طرف ایک اہم راستہ نکلتا ہے ۔بیک وقت ان چاروں راستوں پر سفر کرنا نہ صرف دشوار ہے بلکہ ناممکن بھی نظر آتا ہے ۔آج کا ہر نوجوان ایسی ہی کشمکش سے دوچار ہے ۔یہ اخبار ایک ایسا ذریعہ ہے جو نوجوان نسل کو بے معنی راستوں پر ڈگمگاتے رہنے کی بجائے  ایک مثبت اور مضبو ط راستے پر پہنچائے گا ۔جس سے وہ اپنے مستقبل کو محفوظ کرنے کے ساتھ ساتھ سنوار بھی لیں گے ۔

 

ہفت روزہ مون کریشز میں شامل کئے جانے والے اہم نکات

 

کرنٹ آفیئرز پر بامعنی ،مختصر مگر جامع مواد شامل کیاجائے ۔

  •  

ہونہار اور باصلاحیت نوجوانوں کے کارناموں کو اجاگر کیاجائے گا ۔تاکہ نئی جنریشن کو حوصلہ اور راہنمائی ملے اور ایک ہونہار ،باصلاحیت نسل پروان چڑھ سکے ۔

  •  

مختلف شخصیات جو علمی اور ادبی خدمات سرانجام دے رہی ہیں ،ان کی خدمات اور زندگی کے بارے میں معلومات بھی شامل کی جائے گی ۔

  •  

تعلیمی رحجان اور شعبہ تعلیم کی اندر موجود نقائص اوران کی تصیح کیلئے تجاویز و اقدامات کو بھی اخبار کا حصہ بنایاجائےگا ۔

  •  
کشمیر ی ثقافت، کشمیر ی زبان اور مسئلہ کشمیر کے متعلق آگاہی ۔(احباب کی نظر میں)۔
  •  
سٹوڈنٹس کے لئے بھی خصوصی حصے  رکھے جائیں جن میں وہ اپنی آواز اور رائے سامنے لائیں۔
  •  
ادبی تقاریب اور سیمینار منعقد ہوں اور اس میں نوجوانوں کو زیادہ سے زیادہ حصہ لینا چاہیے۔
  •  
انٹرنیٹ کے ذریعے قیمتی معلومات شائع کی جائیں گی ۔جو نواجونوں کی اخلاقیات ،کردار ،صلاحیتوں اور مستقبل کے لئے مثبت ثابت ہوں۔
  •  
جاب اور مستقبل کے بار ے میں مفید معلومات ۔
  •  
بینک کے بار ے   میں تما م معلومات اور سروسز ۔
  •  
شہر میں تما م ورکشاپس ،کورسز وغیر ہ کے حوالہ سے تمام معلومات ۔
  •  
ایس ایم ایس مقصدیت اور شعور ۔
  •  
مختلف کورسز کی گائیڈلائنز ۔
  •  
شہر میں موجود مختلف شخصیات  کا کسی بھی فیلڈ میں منفر د مقام ہو ان کامکمل تعارف ۔
  •  
نوجوانوں کو موقع دیاجائے کہ وہ اپنے اردگرد کے ماحول چاہے وہ تعلیمی ادارے سے متعلق ہو یا اس کے علاوہ اظہار خیال کرسکیں ۔وہ کیا چاہتے ہیں ؟اپنے اردگرد کو کس طرح دیکھنا چاہتے ہیں ؟
  •  
انفارمیشن ٹیکنالوجی سے متعلق مفید معلومات ۔
  •  
سافٹ ویئرز اور کمپیوٹر پروگرامز  پرایک مستقل سلسلہ ۔
  •  
دینی معلومات ،اخلاقی معاملات سے متعلق ایک مستقل سلسلہ
  •  

صفائی کے مسائل ، ٹریفک کے مسائل ، حکومتی پالیسیاں ، متفرق مسائل

  •  
 کالم
  •  
فورم 
  •  
پول
  •  
خبریں
  •  
رائے
  •  
طلبہ کو ہر ایڈیشن میں مضمون
  •  
Topic of the Week
  •  
طلبہ کے لئیےمشورہ جات
  •  
ٹیکنالوجی /سائنس
  •  

والدین کے رائے

  •  
اساتذہ کی آرا
  •  
کھیل
  •  
برین گیمز
  •  
ادارے
  •  

ادبی شخصیات اور علمی شخصیات کے کالمز

  •  
ایڈیٹر /چیف اےڈیٹر کے نام ڈاک /خطوط۔
  •